انتخابی نتائج میں تاخیر، سیاسی جماعتوں کے کارکنان سراپا احتجاج

تصویر بشکریہ پی پی آئی

ملک بھر میں انتخابات کے نتائج میں تاخیر کے خلاف مختلف سیاسی جماعتوں کے امیدوار، کارکنان سمیت دیگر افراد سراپا احتجاج ہیں۔

کراچی:

کراچی کے ضلع غربی کے ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسر (ڈی آر او) آفس کو سیل کردیا گیا اور سیکورٹی خدشات کے باعث ڈی آر او آفس کے باہر پولیس اور رینجرز کو تعینات کردیا گیا ہے۔

پی ٹی آئی کارکن کا کہنا ہے کہ نتائج نہ ملنے پر ڈی آر او آفس کے باہر جمع ہوئے ہیں، فارم 45 کے مطابق جیت چکے ہیں لیکن نتائج روک دیے گئے ہیں۔

کوئٹہ:

ہزارہ ڈیموکریٹ پارٹی نے الیکشن کے نتائج میں تاخیر کے خلاف کمشنر آفس کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا۔

احتجاجی مظاہرے میں پی بی 42 کے امیدوار عبدالخالق ہزارہ، پی بی 40 کے امیدوار قادر علی سمیت دیگر شریک ہیں۔

چیئرمین ایچ ڈی پی عبدالخالق ہزارہ کا کہنا ہے کہ خدشہ ہے ہمارے ساتھ ناانصافی کی جارہی ہے، گزشتہ رات سے ہم یہاں موجود ہیں لیکن ہمیں نتائج نہیں دیے جارہے۔

کوہاٹ:

کوہاٹ کے ڈگری کالج کے باہر نتائج میں تاخیر ہونے کے خلاف پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ کارکنوں کا احتجاج جاری ہے۔

احتجاجی مظاہرے کے باعظ کسی کو بھی ڈگری کالج کے احاطے میں جانے کی اجازت نہیں ہے جبکہ پولیس کی بھاری نفری طلب کرلی گئی ہے۔

باجوڑ:

باجوڑ سے صوبائی اسمبلی کے حلقے پی کے 20 اور 21 کے نتائج میں تاخیر کے خلاف پی ٹی آئی کے کارکنان پشاور کے علاقے باجوڑ کی شاہراہ پر احتجاج مظاہرہ کر رہے ہیں۔

ٹوبہ ٹیک سنگھ:

ٹوبہ ٹیک سنگھ سے قومی اسمبلی کے حلقے این اے 106 کے نتائج میں بھی تاخیر کے خلاف پی ٹی آئی کے کارکنوں کا احتجاج جاری ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں