مسجد الحرام میں پانی کے کین اور بیگ ہمراہ لا نے پر پابندی عائد

 مکہ مکرمہ کی عظیم الشان مسجد الحرام میں آنے والے زائرین پر پانی کے کین اور بیگ اپنے ہمراہ لانے پر پابندی عائد کردی گئی۔ سعودی میڈیا کے مطابق الاخباریہ سے گفتگو کرتے ہوئے مسجد الحرام کے دروازوں کے نگران سیف السلمی نے کہا کہ پانی کے کین اور بڑے بیگ لے جانے کی اجازت نہیں ہے، زائرین ضوابط کا خیال رکھیں تاکہ دیگر عمرہ زائرین کو کسی قسم کی دشواری کا سامنا نہ کرنا پڑے، مسجد الحرام کی انتظامیہ کی ذمہ داری عمرہ زائرین کو ہر ممکن آرام اور سہولت فراہم کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بعض زائرین اپنے ہمراہ بڑے بیگز لاتے ہیں جن کی وجہ سے دوسروں کو کافی دشواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے، اسی بناء پر حرم شریف میں بڑے بیگز اور پانی کے کین لانے پر پابندی عائد ہے، اس لیے مسجد الحرام کے دروازوں پر متعین اہلکاروں کیلئے ہدایت ہے وہ کسی بھی ایسے شخص کو مسجد الحرام میں داخل نہ ہونے دیں جن کے ساتھ پانی کے کین یا بڑے سفری بیگ ہوں۔ بتایا جارہا ہے کہ اس پابندی کا بنیادی مقصد حرم شریف میں طواف و سعی کے دوران لوگوں کو سہولت فراہم کرنا ہے، کیوں کہ مسجد الحرام آنے والے بعض افراد اپنے ہمراہ بڑے تھیلے یا بیگ ساتھ رکھتے ہیں جن میں ان کے اضافی کپڑے یا دیگر سامان ہوتا ہے اور زائرین کی کوشش ہوتی ہے وہ ایسے بیگ اپنے ساتھ حرم شریف کے اندر لے جاسکیں، تاہم اس کی وجہ سے طواف اور سعی کرنے والے دیگر لوگوں کو مشکل صورتحال کا سامنا کرنا پڑتا ہے، اسی طرح چند افراد کی جانب سے اپنا یہ سامان مسجدالحرام کی راہداریوں میں رکھنے کی وجہ سے راستے کی بندش کے باعث دیگر افراد کو پریشانی ہوتی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں