اوپن اے آئی اور گوگل کے مقابلے میں میٹا اے آئی کی نئی ویب سائٹ متعارف

گوگل اور اوپن اے آئی کی آرٹی فیشل انٹیلی جنس (اے آئی) ٹیکنالوجی  کے مقابلے میں میٹا نے میٹا اے آئی چیٹ بوٹ کو بہت زیادہ بہتر تیار کیا ہے۔غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق میٹا کی ایپس جیسے فیس بک، انسٹا گرام اور واٹس ایپ میں بھی یہ اے آئی چیٹ بوٹ کا اضافہ کیا گیا جو کہ صارفین کو دستیاب ہو رہا ہے۔ تاہم ویب ورژن پر گوگل اور اوپن اے آئی سے مقابلے کے لیے بھی میٹا اے آئی کی نئی ویب سائٹ لانچ کی گئی ہے۔  نئے لاما 3 ماڈل پر مبنی یہ اے آئی چیٹ بوٹ اوپن سورس ہے۔

اس نئی ویب سائٹ کا انٹر فیس اوپن اے آئی کے چیٹ جی پی ٹی سے کافی حد تک ملتا جلتا ہے اور اسے مفت یا لاگ ان ہوئے بغیر بھی استعمال کیا جا سکتا ہے۔ مگر فیس بک کے ذریعے بھی آپ لاگ ان ہو سکتے ہیں اور کمپنی کے مطابق اس سے ماڈل کو ٹریننگ دینے میں مدد ملے گی۔میٹا اے آئی سائٹ پر تحریری سوالات کے جواب جاننے کے ساتھ ساتھ صارفین تصاویر بھی تیار کروا سکیں گے مگر تصاویر کی تیاری کے لیے لاگ ان ہونا ضروری ہوگا۔ مینا کا امیج جنریٹر کافی متاثر کن ہے جو لکھنے کے دوران ہی رئیل ٹائم میں تصاویر کا پر یو بود کھاتا ہے۔اس کے ساتھ ساتھ امیج جزیٹر سے اپنیمیٹ تصاویر بھی تیار کروائی جاسکتی ہیں۔ تمام تصاویر پر میٹا اے آئی کا واٹر مارک بائیں جانب نیچے موجود ہوگا تا کہ ان کا غلط استعمال نہ کیا جا سکے۔ میٹا کو توقع ہے کہ یہ سائٹ چیٹ جی پی ٹی اور اوپن اے آئی کے ایج جنریٹر ڈیل ای کا اچھا متبادل ثابت ہو گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں