امریکی حکّام نے ہیری اور میگھن کے خیراتی ادارے کو غیر قانونی کیوں قرار دیا؟

ـــ فائل فوٹو 

برطانوی شہزادہ ہیری اور میگھن مارکل کو کیلی فورنیا رجسٹری آف چیریٹیز اینڈ فنڈ ریزرز کی جانب سے مجرم قرار دیے جانے کے بعد ان کے خیراتی ادارے ’آرچ ویل فاؤنڈیشن‘ کو بھی غیر قانونی قرار دے دیا گیا ہے۔

امریکی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق، 3 مئی کوکیلیفورنیا کے اٹارنی جنرل روب بونٹا نے آرچ ویل فاؤنڈیشن کو چیریٹیز اور فنڈ جمع کرنے والوں کی رجسٹری کی جانب سے نوٹس جاری کیا ہے۔

اس حوالے سے حاصل کردہ دستاویز کے مطابق، آرچ ویل فاؤنڈیشن کو رجسٹری آف چیریٹیز اینڈ فنڈ ریزرز کے پاس مطلوبہ سالانہ رپورٹ یا تجدید کے لیے فیس جمع کروانے میں ناکامی پر غیر قانونی قرار دیا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق، آرچ ویل فاؤنڈیشن کو غیر قانونی قرار دیے جانے کے بعد کسی بھی طرح کے فنڈز اکٹھا کرنے یا تقسیم کرنے سے بھی روک دیا گیا ہے۔

رپورٹ میں مزید بتایا ہے کہ جب  آرچ ویل فاؤنڈیشن کو غیر قانونی قرار دیا گیا تو ادارے نے اس الجھن کو دور کرنے کے لیے کیلیفورنیا کے محکمۂ انصاف  سے رابطے میں ہےجو رجسٹری آف چیریٹیز اینڈ فنڈ ریزرز چلاتا ہے۔

محکمۂ انصاف کا اس معاملے کی تحقیقات کرنے کے بعد کہنا ہے کہ اب یہ معاملہ سلجھ گیا ہے اور آرچ ویل فاؤنڈیشن نے تمام ضروری قانونی کارروائی مکمل کرلی ہے اس لیے اب ادارے پر کسی قسم کوئی پابندی نہیں ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں