انٹرنیٹ بندش پر چیف الیکشن کمشنر کا مؤقف سامنے آگیا

سکندر سلطان راجہ— فائل فوٹو

چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ نے کہا ہے کہ جب محسوس ہوگا سیکیورٹی کا مسئلہ نہیں تو انٹرنیٹ کھول دیا جائے گا۔

چیف الیکشن کمشنر کا کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن کا اپنا نظام ہے، انٹرنیٹ سے الیکشن کمیشن کا کوئی تعلق نہیں، الیکشن کمیشن انٹرنیٹ بندش کا ذمہ دار نہیں ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ ہمارا اپنا سسٹم کام کر رہا ہے، ہم حکومت سے رابطے میں ہیں، الیکشن کمیشن بہت مضبوط ہے، انٹرنیٹ کا معاملہ ہمارا مینڈیٹ نہیں ہے۔

 چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ نے کہا ہے کہ کیا ووٹرز کو آج ہی 8300 پر ووٹ چیک کرنا تھا، الیکشن اسکیم جاری ہونے کے بعد ووٹرز کو اپنا ووٹ چیک کرنا چاہیے تھا۔

چیف الیکشن کمشنر نے کہا ہے کہ کہیں سیکیورٹی کا مسئلہ ہے تو الیکشن کمیشن کیوں ہدایت دے کہ انٹرنیٹ بحال کریں، رزلٹ کے اعلان کا بہترین نظام موجود ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ نتائج 8 بجے بھی آسکتے ہیں اور 9 بجے بھی، ای ایم ایس سسٹم میں صوبائی حلقوں کے لیے 3 اور قومی کے لیے 4 ورک اسٹیشن ہیں۔

واضح رہے کہ صبح 8 بجے سے پہلے ملک بھر میں موبائل فون سروس عارضی طور پر معطل کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں