عوامی مینڈیٹ کو تسلیم کیا جائے بانی پی ٹی آئی کا وکلا کے ذریعے پیغام 

اسلام آباد(نمائندہ نوائے وقت) پی ٹی آئی کے وکلاء عمیر نیازی اور سلمان صفدر نے جیل میں بانی پی ٹی آئی سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ بانی پی ٹی آئی نے الیکشن نتائج پر قوم کو مبارکباد کا پیغام بھیجا، اور کہا کہ وفاق، صوبہ پنجاب اور خیبر پختونخواہ میں حکومت بنائیں گے۔ بانی پی ٹی آئی نے اپنے پیغام میں مزید کہا کہ قوم نظریے اور جمہوریت کے ساتھ کھڑی ہے، جس طرح لوگوں نے ووٹ کاسٹ کیا، یہ 1970 ء سے زیادہ لوگ باہر آئے ہیں، پی ٹی آئی وفاق، پنجاب اور کے پی کے میں حکومت بنائے گی، بانی پی ٹی آئی نے ملک کے سب سے بڑے ادارے سے اپیل کی کہ قوم کے ساتھ جو ہورہا ہے اس سے زیادہ نہیں ہونا چاہئیے، جن حلقوں میں نتائج تبدیل کیے گے ان کے امیدوار آج نکلیں اور پر امن احتجاج کریں، جمہوری عمل میں ووٹ کی عزت ہے، ووٹ چوری ہوگیا تو اختجاج کریں، ہماری معیشیت زمین بوس ہوچکی ہے، سیاسی عدم استحکام نہیں ہونا چاہئیے۔ پاکستان کو بند گلی میں نہ لے کر جائیں، پری پول دھاندلی اور اداروں کو استعمال کیا گیا، ادارے کمزور ہوچکے ہیں، نواز شریف نے ہمیشہ حکومت کو بینک کرپٹ کیا، مکس اچار کے ساتھ حکومت نہ بنانے دیں۔50 سیٹوں پر والا کیسا فتح کا اعلان کرسکتا ہے۔ پی ٹی آئی کے مینڈیٹ کا احترام کیا جائے، ملاقات میں شریک بیرسٹر سلمان صفدر کا کہنا تھا کہ 190 ملین پائونڈ سکینڈل میں قانونی ٹیم کو اندر جانے نہیں دیا گیا، نیب عدالتی عملہ، تفتیشی ٹیم اور پراسیکیوٹرز جیل کے اندر گے لیکن بانی پی ٹی آئی وکلاء کو اندر نہیں جانے دیا، بشری بی بی کو عدالت میں پیش نہیں کیا گیا، جیل میں تمام سہولیات کے باوجود بشریٰ بی بی کو بنی گالا رکھا گیا۔3 گھنٹے وکلاء کھڑے رہے، درخواست کے باوجود قانونی ٹیم اندر نہیں جاسکی، بانی پی ٹی آئی بالکل فریش تھے، وہ جانتے تھے باہر کیا ہوا ہے، الیکشن کے حوالے سے بڑی تفصیلی ہدایا ت دی، بانی پی ٹی آئی کے 16 مہینوں سے کیس چل رہے ہیں۔ بانی پی ٹی آئی ہر جرم کے ٹرائل کا سامنا کر رہے ہیں۔7 ماہ ہوچکے، بانی پی ٹی آئی نے ایک دن بھی نہیں کہا کہ کب باہر آئوں گا، اب دن آچکے ہیں بانی پی ٹی آئی کو عوام میں آنا چاہئیے، تمام مقدمات ریت کا ڈھیر ثابت ہوں گے، بانی پی ٹی آئی کو تین مقدمات کا دکھ ہوا ہے۔ ایک ظلہ شاہ قتل کیس، کرپشن کیس اور عدت میں نکاح کیس، یہ مقدمات چلانا ذاتی معاملات ہیں، ان کو عدالت میں نہیں آنا چاہئے تھا۔ بشری بی بی کو بنی گالا میں رکھنے پر بانی پی ٹی آئی نے اعتراض کیا ہے، بانی پی ٹی آئی نے اپیل کی ہے کہ بشری بی بی کو جیل منتقل کیا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں