پاکستان کرکٹ بورڈ نے شاہین آفریدی کو ہٹانے کی وجوہات بتادیں


پاکستان کرکٹ بورڈ ( پی سی بی ) نے شاہین شاہ آفریدی کو کپتانی سے ہٹانے کی وجوہات بتادیں۔

ایک بیان میں پی سی بی نے کہا ہے کہ شاہین آفریدی کو قیادت سے ہٹاکر ذمے داری بابر اعظم کو سونپنا ایک اسٹریٹجک قدم ہے، جس کا مقصد ورک لوڈ کو مد نظر رکھتے ہوئے کھلاڑیوں کی اعلیٰ کارکردگی کو یقینی بنانا تھا۔

بیان میں کہا گیا کہ شاہین آفریدی نے بلاشبہ خود کو ایک اسٹار فاسٹ بولر ثابت کیا ہے، انہوں نے کئی برسوں سے پاکستان کے پیس اٹیک کی قیادت کی ہے، بورڈ ان کی بہترین کارکردگی کو برقرار رکھنے کےلیے روٹیشن اور آرام کی اہمیت کو سمجھتا ہے۔

پی سی بی کے مطابق کپتان کی تبدیلی کا فیصلہ کھلاڑیوں کے لمبے کیریئر اور فاسٹ بولرز کو انجریز سے بچانے کے ضمن میں بورڈ کے عزم کو ظاہر کرتا ہے۔

پی سی بی کا کہنا تھا کہ ورک لوڈ مینجمنٹ کو مدنظر رکھتے ہوئے یہ فیصلہ اس بات کو یقینی بنانے کےلیے ہے کہ پی سی بی کے اہم بولرز اپنے کھیل میں نمایاں رہیں۔

پی سی بی کے مطابق بورڈ نہیں چاہتا کہ قومی ٹیم بولنگ کے وسائل کے حوالے سے انجریز کے بحران سے دوچار ہو جیسا کہ آئی سی سی ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ 2022 سے پہلے شاہین آفریدی انجرڈ ہوئِے تھے اور آئی سی سی ون ڈے کرکٹ ورلڈکپ 2023 میں ٹیم کونسیم شاہ کی خدمات حاصل نہیں تھیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں