میڈیا مانیٹرنگ کیلئے پہلی اے آئی سائبر پالیسی پر کام کر رہے ہیں:روبینہ افضل

لاہور(نیوز رپورٹر) ڈائریکٹر جنرل پبلک ریلیشنز پنجاب روبینہ افضل نے کہا ہے کہ الیکٹرانک میڈیا کی مانیٹرنگ کیلئے آرٹیفیشل انٹیلیجنس کے استعمال کی منصوبہ بندی کی جا رہی ہے جبکہ پنجاب کی پہلی سائبر ایڈورٹائزنگ پالیسی پر بھی تیزی سے کام کیا جا رہا ہے۔ یہ بات انہوں نے اسلام آباد میں پی آئی ڈی کے ڈائریکٹوریٹ آف الیکٹرانک میڈیا اینڈ پبلیکیشن اور سائبر ونگ کے دورہ کے موقع پر کہی۔ ڈی جی ڈیمپ عمرانہ وزیر اور ڈی جی سائبر ونگ پی آئی ڈی وقار صدیقی بھی موجود تھے۔ڈی جی پی آر کو الیکٹرانک میڈیا اور سوشل میڈیا مانیٹرنگ کے بارے میں پی آئی ڈی کے افسران نے تفصیلی بریفنگ دی۔ روبینہ افضل نے پی آئی ڈی میں ڈیمپ سنٹرل مانیٹرنگ یونٹ، ڈیٹا سٹوریج سنٹر اور الیکٹرانک میڈیا ڈیش بورڈ کا تفصیلی معائنہ کیا۔ روبینہ افضل نے کہا الیکٹرانک میڈیا کی مانیٹرنگ کو جدید دور کے تقاضوں سے ہم آہنگ کیا جا رہا ہے اور اس مقصد کیلئے آرٹیفیشل انٹیلیجنس کے استعمال کرنے کی منصوبہ بندی کی جا رہی ہے۔ آرٹیفیشل ٹیکنالوجی کی مدد سے چہرے اور آواز کی شناخت سے بھی الیکٹرانک چینلز کی مانیٹرنگ کی جائے گی۔ عوام تک درست معلومات کی رسائی اور غلط معلومات کی ترسیل روکنے کیلئے الیکٹرانک میڈیا کی مانیٹرنگ انتہائی ضروری ہے اور اس حوالے سے ڈی جی پی آر پنجاب اور پی آئی ڈی الیکٹرانک میڈیا مانیٹرنگ کیلئے باہمی تجربات سے استفادہ کریں گے۔ پنجاب میں ڈیجیٹل میڈیا پر عوامی آگاہی مواد کی تشہیر وقت کی ضرورت ہے۔ پنجاب اور وفاق یکساں سائبر ایڈورٹائزنگ پالیسی کیلئے ورکنگ گروپ بنایا جا رہا ہے۔ ایکس، فیس بک اور ٹک ٹاک کو مفاد عامہ کے مواد کہ تشہیر کیلئے استعمال کیا جائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں